Eating Potatoes 128

یہ آدمی ایک سال تک روزانہ مسلسل صرف آلو کھاتا رہا، نتیجہ کیا نکلا؟

لندن(خبر کی دنیا)اگر آپ کو مسلسل ایک سال کیلئے صرف آلو کھانے کو کہا جائے تو آپ کا جواب کیا ہوگا؟ شاید آپ معذرت کرنا ہی بہتر سمجھیں گے، لیکن ذرا اس برطانوی شہری کی تو سنئے کہ ایک سال تک صرف آلو(potatoes) کھانے کے بعد وہ کیسا محسوس کررہا ہے۔ جی ہاں، اینڈریو فلائنڈرز ٹیلر نامی اس شخص نے گزشتہ سال ستمبر میں اعلان کیا تھا کہ وہ اگلے ایک سال تک صرف آلو(potatoes) کھائیں گے اور پھر انہوں نے اس بات پر عمل بھی کر دکھایا۔ انہوںنے ’سپڈ فٹ‘ کے نام سے ایک پراجیکٹ کا آغاز کیا جس میں وہ پورے ایک سال تک صرف آلو کھاتے رہے ہیں اور اب ان کی خوشی کا کوئی ٹھکانہ نہیں ہے۔ اینڈریو کا کہنا ہے کہ ایک سال تک آلو کھانے کے بعد ان کے وزن میں تقریباً 50 کلوگرام کی کمی ہوچکی ہے۔

دی میٹرو کے مطابق اینڈریو نے اس منفرد تجربے کے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا ”گزشتہ دو سال کے دوران میں خود کو بہت ان فٹ محسوس کررہا تھا۔ میرا وزن تقریباً 152 کلوگرام ہوچکا تھا اور میں اس سے بہت ہی ناخوش تھا۔ پھر مجھے پتہ چلا کہ میں اگر میں صرف آلو اور میٹھے آلو (شکرقندی) کھانا شروع کردوں تو نہ صرف میری غذائی ضروریات پوری ہوتی رہیں گے بلکہ وزن میں بھی کمی ہوجائے گی۔ مجھے معلوم تھا کہ صرف آلو(potatoes) کھانے سے مجھے آئرن، وٹامن اور دیگر اجزاءضرور مل جائیں گے لہٰذا میں نے یہ تجربہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

میرے اس فیصلے پر کچھ ماہرین نے تحفظات کا اظہار کیا تھا لیکن میں نے یہ کام شروع کردیا۔ ایک سال تک میں صرف آلوﺅں کو مختلف قسم کی چٹنیوں کے ساتھ کھاتا رہا ہوں۔ اس ایک سال کے دوران میں روزانہ تقریباًتین کلو آلو کھاتا رہا ہوں اور ورزش کے طور پر ایک گھنٹے کیلئے سائیکل بھی چلاتا رہا ہوں۔ اب میرے وزن میں تقریباً 50کلوگرام کی کمی ہوچکی ہے اور میں خود کو پہلے سے کہیں زیادہ چست و توانا محسوس کرتا ہوں۔“

اینڈریو کا معائنہ کرنے والے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اس کی صحت اچھی ہے۔ ڈاکٹروں نے اس کی بنیادی وجہ اس بات کو قرار دیا ہے کہ وہ آلوﺅں کو چھلکے سمیت کھاتا رہا ہے، جس کی وجہ سے اسے فائبر ملتا رہا ہے، اور ان کے گودے میں دودھ کی آمیزش بھی کرتا رہا ہے جبکہ شکرقندی کی وجہ سے اسے وٹامن اے اور اے بی ملتے رہے ہیں۔
اگرچہ اینڈریو کا کہنا ہے کہ وہ خود کو پہلے سے زیادہ تندرست محسوس کرتا ہے اور اس کے کولیسٹرول اور بلڈ پریشر میں بھی کمی ہوئی ہے جبکہ شوگر لیول بھی کم ہوا ہے، لیکن اس کے باوجود ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ کسی بھی عام شخص کو اس طرح کا تجربہ نہیں کرنا چاہیے کیونکہ صرف ایک طرح کی غذا کھاتے رہنے سے جسم میں بہت سے ضروری اجزاءکی کمی ہوسکتی ہے جس کا نتیجہ کئی طرح کی بیماریوں کی صورت میں سامنے آسکتا ہے۔

جب آپ مر جاتے ہیں تو اس کے بعد آپ کا دماغ۔۔۔‘ پہلی مرتبہ سائنسدانوں کا تہلکہ خیز انکشاف

حوالہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں