sim 75

موبائل سم تو ہم سب استعمال کرتے ہیں لیکن کیا آپ کو معلوم ہے لفظ سم کا دراصل مطلب کیا ہے؟

لاہور(خبر کی دنیا)آج کے دور میں کون ہے جو سم (sim)استعمال نہیں کرتا، لیکن یقینا ایسے لوگ بہت ہیں جو جنہیں معلوم نہیں کہ لفظ سم(sim) کا مطلب کیا ہے اور پلاسٹک کے اس چھوٹے سے ٹکڑے کے اندر ایسا کیا ہوتا ہے جو اسے آپ کے موبائل فون کی جان بنا دیتا ہے۔

وکی پیڈیا کے مطابق لفظ سم (SIM) انگریزی الفاظ Subscriber Identity Module کا مخفف ہے، جس کا معنی ’سبسکرائبر کا شناختی ماڈیول‘ ہے۔ دراصل اس کا اصل مقصد موبائل نیٹ ورک کو صارف کی منفرد شناخت فراہم کرنا ہے، اور اسی لئے اسے شناختی ماڈیول کہا جاتا ہے۔ ہر صارف کی سم (sim)کا شناختی نمبردوسرے صارف سے مختلف ہوتا ہے، صرف ملکی ہیں نہیں بلکہ عالمی سطح پر بھی، اور یہی بات ہر صارف کو نیٹ ورک پر دوسروں سے الگ شناخت مہیا کرتی ہے۔

سم کے اندر ایک الیکٹرانک انٹی گریٹڈ سرکٹ ہوتا ہے جس کے اندر ’انٹرنیشنل موبائل سبسکرائبر آئڈینٹٹی (IMSI)‘ کی معلومات محفوظ ہوتی ہیں۔ اس شناختی نمبر کی مدد سے نیٹ ورک کسی بھی موبائل فون کی شناخت کرتا ہے۔ اس کے ساتھ ICCID نامی ایک کوڈ، سکیورٹی اتھینٹیکشن اینڈ سائفرنگ انفرمیشن، لوکل نیٹ ورک کے متعلق عارضی معلومات، صارف کے زیر استعمال سروسز کی معلومات، اور دو قسم کے پاس ورڈ کی معلومات بھی سم میں سٹور ہوتی ہیں۔ یہ پاس ورڈ عام استعمال کے لئے PIN اور ’پرسنل ان بلاکنگ کوڈ‘ یعنی PUK کہلاتے ہیں۔

سم کو صرف عام موبائل فون ہی نہیں بلکہ سیٹلائٹ فون، کمپیوٹر اور کیمرے جیسے آلات میں بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اگرچہ اس کا بنیادی کام صارف کی شناختی معلومات کو سٹور کرنا ہے لیکن عموماً اس پر محدود مقدار میں ڈیٹا سٹور کرنے کی سہولت بھی دی جاتی ہے، جیسا کہ کنٹیکٹ معلومات وغیرہ۔

خشکی اور سمندر پر چلنے والی الیکٹرک جیپ

حوالہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں