girl walking and using mobile phone 53

چلتے پھرتے موبائل فون استعمال کرنے سے انسانی جسم میں یہ تبدیلی آرہی ہے

نیویارک(خبرکی دنیا) آج کل موبائل فون ضرورت سے آگے بڑھ کر جنون کی شکل اختیار کر چکا ہے۔ نوجوان نسل سمارٹ فونز کی اس قدر عادی ہو چکی ہے کہ راہ چلتے ہوئے بھی ان کی نظریں سکرین سے نہیں ہٹتیں۔ سائنسدانوں نے اپنی نئی تحقیق میں ایسے ہی نوجوانوں کے لیے انتہائی سنگین تنبیہ کر دی ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ’’چلتے ہوئے موبائل فون استعمال کرنے سے صارفین کی چال تبدیل ہوتی جا رہی ہے۔ ایسے نوجوانوں کے چلنے کا انداز 80سال کے بزرگوں جیسا ہوتا جا رہا ہے۔ وہ انتہائی آہستگی سے لمبے لمبے قدموں کے ساتھ چلنا شروع ہو گئے ہیں۔ چلنے کا یہ انداز آئندہ زندگی میں نوجوانوں کے لیے بہت خطرناک ثابت ہو گا اور وہ کمر اور گردن کے مسائل سے دوچار ہو جائیں گے۔‘‘

دماغی تھکن والوں کے لئے خوشخبری ،ایسا آسان علاج کہ وہ بھول جانے کی بیماری سے بھی بچ سکتے ہیں

کیمبرج کی اینگلیا رسکین یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے اپنی اس تحقیق میں 400کے لگ بھگ شرکاء پر تجربات کیے۔ سائنسدانوں نے انہیں مختلف گروپوں میں تقسیم کیا اورکچھ عرصے تک مختلف صورتحال میں چلنے کو کہا۔ ان میں سے جس گروپ کو موبائل فون کی سکرین پر نظریں جما کر چلنے کو کہا گیا تھا ان کی چال تبدیل ہو گئی تھی اور وہ آہستہ مگر لمبے قدموں کے ساتھ چلنے لگے تھے۔‘‘ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر میتھیو ٹیمیز کا کہنا تھا کہ ’’ہماری تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ موبائل فون پر پیغام یا ای میل وغیرہ ٹائپ کرتے ہوئے چلنا سب سے زیادہ خطرناک ہوتا ہے۔ دوسرے نمبر پر پیغامات وغیرہ پڑھتے ہوئے چلنا نقصان دہ ہے۔ ایسے لوگوں کی چونکہ نظریں سکرین پر ہوتی ہیں لہٰذا وہ راستے کی ممکنہ رکاوٹوں سے بچنے کے آہستہ چلتے ہیں اور لمبے قدم اٹھاتے ہیں۔ بتدریج ان کی اس انداز میں چلنے کی عادت پختہ ہوتی چلی جاتی ہے جو آئندہ زندگی میں ان کے لیے کئی طرح کے مسائل کا باعث بن سکتی ہے۔ بالخصوص ان کے گردن اور کمر کی تکالیف میں مبتلا ہونے کے امکانات کئی گنا بڑھ جاتے ہیں۔‘‘
حوالہ

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں