husband and wife 140

شادی کے کتنے عرصے بعد خواتین اپنے شوہروں سے بور ہوجاتی ہیں؟ جدید تحقیق

لندن(Khabar Ki Dunya) میاں بیوی (Husband and Wife) کا ساتھ زندگی بھر کا ہوتا ہے اوراس طویل سفر میں ان کا بسااوقات ایک دوسرے سے اکتا جانا فطری بات ہے۔ اب سائنسدانوں نے میاں بیوی (Husband and Wife) کے ایک دوسرے سے بور ہونے کے متعلق نئی تحقیق میں ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ جان کر شوہروں کو پسینہ آ جائے گا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق برطانوی سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ ”بیویاں شادی کے صرف ایک سال بعد ہی اپنے شوہر سے بور ہو جاتی ہیں۔ انہیں اس کے ساتھ جسمانی تعلق استوار کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں رہتی اور وہ اس کام سے کترانے لگتی ہیں۔ ان کے برعکس مردوں میں یہ صفت نہیں پائی جاتی۔ وہ کبھی بھی اپنی بیوی کے ساتھ جسمانی تعلق سے نہیں اکتاتے۔“

رپورٹ کے مطابق اس تحقیق میں برطانیہ کی ساﺅتھ ہیمپٹن یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے 11ہزار508 شادی شدہ مردوخواتین سے ان کی جنسی عادات اور لائف سٹائل کے متعلق سوالات کیے۔ 34فیصد خواتین نے اعتراف کیا کہ وہ شادی کے 12ماہ بعد ہی اپنے شوہر کے ساتھ تعلق استوار کرنے میں دلچسپی کھو بیٹھی تھیں۔ مردوں میں یہ شرح صرف 15فیصد تھی۔تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ پروفیسر سنتھیا گراہم کا کہنا تھا کہ ”تحقیق میں یہ ثابت ہوا ہے کہ شادی کے کچھ عرصہ بعد خواتین کی زیادہ دلچسپی اس تعلق کو طویل کرنے اور اپنے شوہر کے ساتھ گفت وشنید میں ہوتی ہے۔ وہ اپنے شوہر کے ساتھ جسمانی تعلق کی بجائے اس کے ساتھ گفتگو کرنا زیادہ پسند کرنے لگتی ہیں۔“
امریکہ کی یونیورسٹی آف کیلیفورنیا کے سائنسدانوں کی ایک الگ تحقیق میں خواتین پر جنسی عمل کے حیران کن اثرات کا بھی انکشاف ہوا ہے۔ اس تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ’جنسی تعلق خواتین کی صحت کو بہتر بنانے اور ان کی زندگی طویل کرنے کا سبب بنتا ہے۔ زیادہ جنسی عمل خواتین کو ذہنی پریشانی سے نجات دلاتا ہے اور ان کی قوت مدافعت بڑھاتا ہے۔ اس سے ان کے ڈی این اے کے ’ٹیلومیر‘ نامی کروموسومز کی لمبائی بھی بڑھ جاتی ہے جس کے باعث وہ زیادہ عمر پاتی ہیں۔‘

حوالہ

’پاخانہ کرنے کے فوراً بعد ہر صورت یہ کام کرنا چاہیے‘ سائنسدانوں کا حیران کن انکشاف

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں